بین الاقوامی سفرا ء ملک میں کسی سے بھی ملنے میں آزاد ہیں۔ ترجمان دفتر خارجہ

اسلام آباد(ثاقب علی)بین الاقوامی سفیروں کی پاکستان میں سیاسی جماعتوں کی قیادت سے ملاقاتوں کے بارے علم نہیں ہے اور نا ہی ہمیں بریف کیا جاتا ہے،ترجمان دفتر خارجہ پاکستان، دفتر خارجہ پاکستان کی ہفتہ وار بریفننگ میں کہا کہ پاکستان غزہ میں جنگ بندی کا شدت سے انتظار کر رہا ہے، جنگ بندی ہو تاکہ غزہ میں انسانی امداد کی رسائی ممکن بنائی جا سکے۔اسلام آباد میں ہفتہ وار بریفنگ کے دوران ترجمان دفتر خارجہ ممتاز زہرہ بلوچ نے کہا کہ ہم سمجھتے ہیں کہ امن صرف بات چیت سے ممکن ہے، غزہ میں 6 ہزار سے زائد بچے شہید ہوئے جو کہ غزہ کی آبادی کا 40 فیصد ہیں۔انہوں نے کہا کہ رواں ہفتے میں بچوں کا عالمی دن منایا گیا، غزہ بچوں کے لیے سب سے مشکل جگہ بن چکی ہے۔ترجمان نے کہا کہ رواں ہفتے پاکستان ڈنمارک، فن لینڈ اور سوئیڈن سے سیاسی مشاورت کر رہا ہے۔ممتاز زہرہ بلوچ نے کہا کہ ڈنمارک کے ساتھ سیاسی مشاورت 21 نومبر کو منعقد ہوئی، سوئیڈن کے ساتھ سیاسی مشاورت آج منعقد ہو رہی ہے جبکہ فن لینڈ کے ساتھ مشاورت کل ہوگی۔ترجمان نے کہا کہ نگراں وزیرِ اعظم یکم اور 2 دسمبر کو متحدہ عرب امارات میں کاپ 28 میں شرکت کر کے موسمیاتی تغیر پر پاکستانی تصور پیش کریں گے۔ممتاز زہرہ بلوچ نے مزید کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مسلح افواج کی تعیناتی بچوں کے لیے ایک شدید صدمہ ہے۔ترجمان نے کہا کہ تصدیق کرتی ہوں کہ پاکستان نے باضابطہ طور پر برکس میں شمولیت کی درخواست دی ہے، پاکستان نے یہ فیصلہ جوہانسبرگ میں برکس سے متعلق پیشرفت کا جائزہ لینے کے بعد کیا، امید کرتے ہیں کہ برکس کی طرف سے ہماری درخواست پر عمل کیا جائے گا۔ بین الاقوامی سفراء کی پاکستان میں سیاسی جماعتوں کی قیادت سے ملاقاتوں کے بارے سوال پر ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ پاکستان میں موجود سفیروں پر کوئی پابندی نہیں ہے کہ وہ کسی سے نا ملیں بہرحال بین الاقوامی سفیروں کی پاکستان میں سیاسی جماعتوں کی قیادت سے ملاقاتوں کے بارے علم نہیں ہے اور نا ہی ہمیں بریف کیا جاتا ہے۔ وہ کسی سے بھی ملاقات میں آزاد ہیں۔

متعلقہ آرٹیکلز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button