نواز شریف اسے آرمی چیف بنانا چاہتا ہے جس سے اس کی چوری بچے، عمران خان

نواز شریف اسے آرمی چیف بنانا چاہتا ہے جس سے اس کی چوری بچے، عمران خان
Spread the love

لاہور: تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا کہ جو میرٹ پر آئے اسے آرمی چیف بننا چاہیے لیکن نواز شریف اسے آرمی چیف بنانا چاہتا ہے جس سے اس کی چوری بچے، نواز شریف ہمیشہ اس آدمی کو اوپر لاتا ہے جس سے اسے فائدہ ملے۔

لاہور سے ویڈیو لنک کے ذریعے آزادی مارچ سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ موجودہ حکومت نئے آرمی چیف کی تعیناتی کرنے جارہی ہے، 30 سال سے چوری کرنے والا نواز شریف اب آرمی چیف کی سلیکشن کا فیصلہ کرنے جارہا ہے، ملک کی قسمت کا ہر بڑا فیصلہ وہ کرمنل کرے گا جو گزشتہ تیس برس سے ملک سے باہر پیسہ لے جارہا ہے، غیرممالک میں کوئی کرمنل ایسا بڑا فیصلہ نہیں کرسکتا، کبھی نہیں سنا ہوگا کہ برطانیہ میں کسی کرمنل نے این آر او لے لیا ہو۔

انہوں نے کہا کہ نواز شریف مشرف سے معاہدہ کرکے باہر گیا، وزیراعظم لندن میں اُس شخص سے ملتا ہے جو جھوٹ بول کر باہر گیا، نواز شریف کو جے آئی ٹی سے سزا ملی، جو جے آئی ٹی سے سزا یافتہ ہے وہ اب ملک کے فیصلے کرے گا؟ اسی طرح شہباز شریف کو ایف آئی اے سے سزا ملنے والی تھی کہ اسے وزیراعظم بنادیا گیا اور شہباز شریف کے کیسز کے سارے گواہ دو ماہ کے اندر مرگئے۔

چیئرمین تحریک انصاف کے کہا کہ ہمارے دور میں انہوں ںے این آر او کے لیے تین لانگ مارچ کیے، ان کا مقصد اقتدار میں آکر صرف کرپشن کے کیسز ختم کرنا تھا اور انہوں نے اقتدار میں آتے ہی 1100 ارب روپے کے کیسز معاف کراکے ملک پر تباہی پھیر دی۔

انہوں ںے کہا کہ ملک کا سابق وزیراعظم ایک ایف آئی آر درج نہیں کراسکتا کیوں کہ طاقت ور سامنے کھڑا ہے، یہاں طاقت ور کو جیل میں نہیں ڈالا جاتا بلکہ اس سے ڈیل کی جاتی ہے۔

عمران خان نے کہا کہ میں الیکٹرانک ووٹنگ مشین کو لانے کے لیے دو سال تک کوششیں کرتا رہا کیوں کہ ای وی ایم کی آمد سے الیکشن میں دھاندلی ختم ہوجاتی، انہوں ںے الیکشن کمیشن کے ساتھ مل کر ای وی ایم آنے ہی نہیں دی، موجودہ چیف الیکشن کمشنر ان کے گھر کا نوکر ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ن لیگ نے کبھی زندگی میں میرٹ پر کوئی کام نہی کیا، جو میرٹ پر آئے اسے آرمی چیف بننا چاہیے لیکن نواز شریف اسے آرمی چیف بنانا چاہتا ہے جس سے اس کی چوری بچے، نواز شریف ہمیشہ اس آدمی کو اوپر لاتا ہے جس سے اسے فائدہ ملے۔

انہوں ںے کہا کہ یہ لوگ چوری کا پیسہ بچانے کے لیے اداروں کو کنٹرول کرتے ہیں، نیب پر بھی انہوں ںے اپنا آدمی بٹھایا ہے کوئی بھی باضمیر انسان ان کے ساتھ کھڑا نہیں ہوسکتا، انہوں نے ایف آئی اے کا قانون بدل کر اسے کمزور کردیا اور اب ہمیں تنگ کررہے ہیں۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ انہوں ںے سوچا کہ میں گولیاں لگنے سے ڈر جاؤں گا، اعظم سواتی بزرگ آدمی ہے ویڈیو سے ڈر جائے گا، ارشد شریف سے جو کچھ کیا اس پر ہم شاک میں ہیں، اس نے ایسا کیا جرم کیا تھا جو اس کو ایسے قتل کیا گیا؟

اپنا تبصرہ بھیجیں