پاکستان اور امریکہ کے درمیان دیرینہ اور دو طرفہ تعلقات ہیں، حنا ربانی کھر

Spread the love

اسلام آباد (ثاقب علی)پاکستان اور امریکہ کے درمیان دیرینہ دو طرفہ مراسم ہیں، مقبوضہ کشمیر کے مظلوم مسلمانوں کے حق میں آواز اٹھانے پر الہان عمر کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔ وزیر خارجہ پاکستان تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز امریکی کانگریس کی مسلمان رکن الہان عمر کی امریکی وفد کے ہمراہ وزارتِ خارجہ آمد ہوئی جہاں وزیر مملکت برائے خارجہ امور حنا ربانی کھر نے مہمانوں کا خیر مقدم کیا۔اس موقع پر وزیر مملکت برائے خارجہ امور حنا ربانی کھر نے الہان عمر اور ان کے وفد کو پاکستان آمد پر خوش آمدید کہا۔حنا ربانی کھر نے کہا کہ پاکستان اور امریکہ کے درمیان دیرینہ اور دو طرفہ مراسم ہیں۔ پاکستان امریکہ کے ساتھ دو طرفہ تعلقات کو مزید مستحکم بنانے اور باہمی دلچسپی کے مختلف شعبہ جات میں دو طرفہ تعاون کو آگے بڑھانے کیلئے پرعزم ہے۔ملاقات میں وزیر مملکت برائے خارجہ حنا ربانی کھر نے مقبوضہ کشمیر میں، 5 اگست 2019 کے یکطرفہ بھارتی اقدامات کے بعد مظلوم کشمیریوں کی پرزور حمایت اور ان کے حق میں آواز اٹھانے پر الہان عمر کا شکریہ ادا بھی کیا۔ممتاز پاکستانی امریکن ڈیموکریٹک رہنما طاہر جاوید بھی اس ملاقات میں شریک تھے۔ وزیر مملکت نے 15 اگست 2021 کو امریکی افواج کے انخلا کے بعد افغانستان میں انسانی بحران کو روکنے کے لیے بین الاقوامی برادری کی شمولیت پر زور دیا، افغانستان میں امن و استحکام کو فروغ دینے کے لیے تعاون کو مزید گہرا کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔
کانگریس کی خاتون رکن الہان ​​عمر نے وزیر مملکت کا ان کے دورہ کے دوران وفد کی مہمان نوازی کے لیے شکریہ ادا کیا۔ پاکستان اور امریکہ کے باہمی تعلقات کی اہمیت کو تسلیم کرتے ہوئے، کانگریس کی رکن عمر نے اتفاق کیا کہ تاریخی طور پر، پاکستان اور امریکہ دونوں کو فائدہ ہوا ہے جب بھی دونوں ممالک نے مل کر کام کیا اور ان تعلقات کو مزید مضبوط کرنے کا عہد کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں