اپوزیشن سے کہتا ہوں کہ گھبرانا نہیں ہے، وزیر اعظم عمران خان

Spread the love

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ جب ہم نے حکومت کی بھاگ دوڑ سنبھالی تو ملک دیوالیہ ہونے کے قریب تھا، اقتدار میں آنے کے بعد جو سب سے زیادہ جملہ ادا کی وہ تھا ’گھبرانا نہیں ہے‘۔

اسلام آباد میں قومی ای پورٹل کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ میں اپنی کابینہ کو بھی بار بار کہتا ہوں کہ ’گھبرانا نہیں ہے‘ اور اب اپوزیشن کو مخاطب کرکے کہتا ہوں کہ ’گھبرانا نہیں ہے‘۔

وزیر اعظم عمران خان نے ملک میں دہرے معیار تعلیم پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ملک کا معیار تعلیم کئی حصوں میں تقسیم ہے جس کی مثال دنیا کے ترقیافتہ ممالک میں نہیں ملتی۔
ان کا کہنا تھا کہ ملک میں یکساں تعلیمی نظام ہی ترقی کا ضامن ہے، تعلیم سمیت دیگر شعبوں میں پاکستان، بھارت سے پیچھے رہ گیا ہے کیونکہ ہمارا تعلیم کا سسٹم نوجوانوں کو اوپر نہیں آنے دیتا

’آئی ٹی میں 50 ارب ڈالر سے زائد کی ایکسپورٹ کرسکتے ہیں‘

وزیر اعظم عمران خان نے رجسٹرڈ فری لانسرز پر ٹیکس ختم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ انفارمیشن ٹیکنالوجی (آئی ٹی) کے مختلف شعبوں کو مراعات فراہم کی گئی ہے جس کے بعد آئندہ چند برس میں آئی ٹی میں 50 ارب ڈالر سے زائد کی ایکسپورٹ کرسکتے ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ دنیا بھر میں ڈیجیٹلائزیشن کی جانب تیزی سے گامزن ہے اور پاکستان کے لیے بھی اپنے ادارتی نظام کو ڈیجیٹلائزیشن کرنا بہت ضروری ہے ورنہ ہم پہلے ہی ترقی کی شرح میں پیچھے ہیں اور مزید تنزلی کا شکار ہوجائیں گے۔

وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ آئی ٹی سیکٹر میں بہت سارے لوگ ارب پتی بن گئے ہیں، دنیا بھر میں لوگ آئی ٹی کے شعبوں رہتے ہوئے اپنی صلاحیت اور آمدنی کو بڑھا رہے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں