مسئلہ کشمیر کو بات چیت کے ذریعے حل کرلیں گے، وزیراعظم

مسئلہ کشمیر کو بات چیت کے ذریعے حل کرلیں گے، وزیراعظم
Spread the love

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ہمیں اپنے سیاسی اختلافات بات چیت سے حل کرنے چاہئیں، مسئلہ کشمیر پاکستان اور بھارت کے درمیان اہم تنازع ہے تاہم توقع ہے اس مسئلے کو بات چیت کے ذریعے حل کرلیں گے۔

چینی ٹی وی سی جی ٹی این کو انٹرویو دیتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان اور چین کی دوستی منفرد ہے، پاک چین دوستی ہر مشکل میں توقعات پر پوری اتری ہے اور ہمارے مستحکم تعلقات کی وجہ سے پورے خطے میں امن قائم ہے۔

انہوں نے کہا کہ سی پیک بیلٹ اینڈ روڈ منصوبے کا فلیگ شپ منصوبہ ہے، سی پیک کا پہلا مرحلہ مواصلاتی رابطوں اور توانائی منصوبوں پر مشتمل تھا، اس کا پہلا مرحلہ مکمل ہوچکا اب ہم سی پیک کے دوسرے مرحلے میں داخل ہو رہے ہیں۔
افغانستان سے متعلق سوالات پر ان کا کہنا تھا کہ افغانستان کو سنگین انسانی بحران کا سامنا ہے اور اس کا زیادہ تر انحصار غیر ملکی امداد پر ہے، افغانستان کے عوام نے 40 سال جنگ کے سوا کچھ نہیں دیکھا۔

کشمیر پر وزیراعظم نے کہا کہ دنیا کسی سرد جنگ کی متحمل نہیں ہوسکتی، خطے میں تمام سیاسی اختلافات بات چیت کے ذریعے حل ہونے چاہئیں، مسئلہ کشمیر پاکستان اور بھارت کے درمیان اہم تنازع ہے، توقع ہے ہم اس مسئلے کو بات چیت کے ذریعے حل کرلیں گے۔

عمران خان نے کہا کہ پاکستان نے کورونا سے نمٹنے کے لیے اقدامات کیے، کورونا سے نمٹنے کے لیے چین نے پاکستان کے ساتھ تعاون کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں