عمران خان کا انتخابی نشان کشمیر فروشی،چینی چوری اور مہنگا آٹا ہونا چاہیے، مریم نواز

عمران خان کا انتخابی نشان کشمیر فروشی،چینی چوری اور مہنگا آٹا ہونا چاہیے، مریم نواز
Spread the love

شاردہ: مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا ہے کہ عمران خان کا انتخابی نشان کشمیر فروشی،چینی چوری اور مہنگا آٹا ہونا چاہیے۔

شاردہ آزاد کشمیر میں انتخابی جلسے سے خطاب کے دوران مریم نواز نے کہا کہ نواز شریف اور مریم نواز خالص کشمیری ہیں ، یہاں ہر شخص میں مجھے نواز شریف نظر آرہا ہے ، نواز شریف ہر شخص کے دل میں بستے ہیں، کشمیریوں کا لیڈر عمران خان جیسا بزدل انسان نہیں ہوسکتا، کشمیریوں کا لیڈر اور سپہ سالار وہی ہوسکتا ہے جو وزیر اعظم ہوتا ہے بھارتی وزیر اعظم پہاکستان کی دھرتی پر تشریف لاتے ہیں، مسئلہ کشمیر نواز شریف کی قیادت میں حل ہوگا۔

مریم نواز نے مزید کہا کہ سلیکٹڈ کی نہ گھر میں عزت ہے اور نہ ہی باہر، وہ کشمیر کو مودی کی جھولی میں پھینک کر پاکستانیوں کو کہتا ہے کہ 2 منٹ کی خاموشی اختیار کرو۔ عوام کی خاموشی ختم ہوگئی عمران خان کی خاموشی ختم ہونے کانام نہیں لے رہی۔ نواز شریف نے کہا تھا عمران خان جیسی سوغات کو جہاں سے لائے ہو واپس لے جاؤ،آج وہی سوغات پاکستانیوں پر قہر بن کر ٹوٹی ہے، سلیکٹڈ نے کشمیر کو بھارت کی جھولی میں ڈال دیا،ٹرمپ سے ملاقات کے بعد عمران خان نے کہا کہ میں ورلڈ کپ جیت کر آیا ہوں۔
رہنما (ن) لیگ نے کہا کہ ملک میں غریبوں کی کمر بوجھ سے نہیں مہنگائی کی وجہ سے جھکی ہوئی ہے، عمران خان کا نام لینے پر چینی اور آٹے کی قطاریں ذہن میں آتی ہیں، عمران خان روزہ داروں کو بھکاریوں کی طرح چینی دینے کے حوالے سے یاد آتا ہے، قطاروں میں چینی دینے کے ساتھ انگوٹھے پر نشان لگائے گئے، 2018 میں عمران خان نے بلے کے نشان پر انتخابات چوری کیے تھے، عمران خان کا انتخابی نشان کشمیر فروشی،چینی چوری اور مہنگا آٹا ہونا چاہیے۔ جو سلیکٹرز کے ساتھ مل اقتدار میں آیا ہو اسے آزادی کا کیا علم ہوگا، آر ٹی ایس بٹھا کر ووٹ چوری کرنے والے کو آزادی کی اہمیت کیا پتہ؟۔

اپنا تبصرہ بھیجیں